حلیم عادل شیخ کی جان کو خطرہ،دھمکی آمیز پیغام

سندھ:اپوزیشن لیڈرسندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ کی جان خطرےمیں، دھمکی آمیز پیغام موصول ہونے سے متعلق اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے اپنا بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ تین چار روز سے ایک نمبر سے دہمکی آمیز کالز اور اسلحے کی تصاویر موصول ہورہی ہیں کہا کہ دہمکی آمیز کالز میں بتایا گیا کہ مجھ ہر حملہ ہوسکتا ہے جس پر میرے پی ایس نے ایف آئی اے کو درخواست بھی جمع کرائی ہےکل رات سے ایک اور ویڈیو مختلف گروپس میں وائرل ہورہی ہے ویڈیو میں دکھانے کی کوشش کی جارہی کہ سندھ پولیس مجھ سے ناراض ہے پولیس کے ہاتھوں مارے جانے والے بے گناہوں کی آواز بنتا ہوں، میری کوئی پولیس سے دشمنی نہیں ہےحلیم عادل شیخ نے کہا کہ اگر کسی پولیس والے کے ساتھ ظلم ہوتا ہے تو میں پولیس کے ساتھ کھڑا ہوتا ہوں، کچھ ماہ پہلے سکھن تھانے کے پولیس اہلکار نعمان شاہ کو مارا گیا میں ان کے گھر گیا تھا۔ شکارپور میں زخمی اور شہید ہونے والے پولیس اہلکاروں کے گھر سب سے پہلے میں گیا تھا جبکہ اوباوڑو میں ہیڈ کانسٹیبل سلطان رند کو مارا گیا میں ان کے گھر بھی پہنچا تھا حلیم عادل شیخ نے کہا کہ یہ وڈیو پولیس کی نہیں اس کے پیچھے سازش ہے اس کے ڈائریکٹر پروڈیوسر وزیراعلیٰ ہاؤس اور بلاول ہاؤس میں بیٹھے ہوئے ہیں مزید کہا کہ میری اگر سیاسی مخالفت ہے تو وہ پی پی سے ہے جسے دشمنی بنادیا گیا ہے اس پوری سازش کے پیچھے آصف زرداری، بلاول زرداری اور مراد علی شاہ اور ان کے بہادر بچے ہیں میں عمران خان کا سپاہی ہوں، صرف اللہ کی ذات سے ڈرتا ہوں اور ان ظالموں کے خلاف مظلوموں کی جنگ لڑتا رہوں گا۔