کھانے کے دوران کی جانے والی کونسی غلطی موٹاپے اور توند کا باعث بنتی ہے؟

کھانے کے دوران کی جانے والی کونسی غلطی موٹاپے اور توند کا باعث بنتی ہے؟

ہم دن بھر میں جو کچھ کھاتے پیتے ہیں وہ ہمارے جسم پربراہِ راست اثر کرتا ہے، تاہم ایک عام سی غلطی توند نکلنے اور موٹاپے کا باعث بنتی ہے تحقیق کے مطابق ہم میں سے اکثر لوگوں میں اپنا کھانا جلدی ختم کرنے کی اور تیزی سے کھانے کی عادت ہوتی ہے، اور یہی عادت ہماری سب سے بڑی غلطی ہے‌ جی ہاں! ویسیڈا یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیاہے کہ کھانے کو تیزی سے بغیر اچھی طرح چبائے کھانا موٹاپے اور توند نکلنے کا سبب بنتا ہے تحقیق کے مطابق کھانے کو اچھی طرح چبانا موٹاپے اور جسمانی وزن میں اضافے کی روک تھام کرتا ہے اور نوالے چبانے کے دوران خرچ ہونے والی توانائی جسمانی درجہ حرارت بڑھاتی ہے‌ ویسیڈا یونیورسٹی کی اس تحقیق کے دوران رضاکاروں کو سیال غذا کے استعمال کے 3 مختلف ٹرائلز کا حصہ بنایا گیا جو سب الگ الگ دنوں میں ہوئے‌ پہلے ٹرائل میں رضاکاروں کو ہر 30 سیکنڈ میں 20 ملی لیٹر سیال غذا نگلنے کی ہدایت کی جبکہ دوسرے ٹرائل میں انہیں کہا گیا کہ وہ غذا کو منہ میں چبائے بغیر رکھیں اور پھر نگل لیں آخری ٹرائل میں رضاکاروں کو 30 ملی لیٹر غذا 30 سیکنڈ تک چبانے اور پھر نگلنے کا کہا گیا ہے