بلوچستان کے اراکین پارلیمنٹ اور سرکاری افسران کے خلاف مبینہ کرپشن کی تحقیقات

بلوچستان کے اراکین پارلیمنٹ اور سرکاری افسران کے خلاف مبینہ کرپشن کی تحقیقات

قومی احتساب بیورو بلوچستان نے سابق و موجودہ اراکین پارلیمنٹ، اعلیٰ سرکاری افسران سمیت سیکڑوں اعلیٰ عہدیداروں کی مبینہ کرپشن کے 150 سے زائد کیسز کی تحقیقات شروع کردی ہیں اس بات کا انکشاف نیب بلوچستان کی جانب سے 2021 کے دوران اپنی کارکردگی رپورٹ میں کیا گیا رپورٹ کے مطابق 2021 میں نیب بلوچستان نے محکمہ کو سٹل ڈویلپمنٹ اینڈ فشریز، جیڈا پسنی فش ہار بر، ریڈ کریسنٹ کے افسران و ماتحت عملے اور بااثر افراد کی کرپشن اور غیرقانونی اثاثوں کے 20 ریفرنسز دائر کیے جبکہ اربوں روپے کی کرپشن کے 120ریفرنس احتساب عدالت میں زیر سماعت ہیں رپورٹ کے مطابق 8 افراد کو گرفتار کیا گیا،کرپشن سے لوٹی گئی تقریباً 6 ارب روپے کی خطیر رقم نقد، جائیدادوں اور زیورات کی صورت کرپٹ عناصر سے وصول کرکے قومی خزانے میں جمع کروائی گئی جبکہ سابق و موجودہ اراکین پارلیمنٹ، اعلیٰ سرکاری افسران سمیت سیکڑوں اعلیٰ عہدیداروں کی مبینہ کرپشن کے 150سے زائد کیسز کی تحقیقات پر تیزی سے کام جاری ہے