سندھ حکومت کا بند اسکولوں کے حوالے سے اہم فیصلہ

سندھ حکومت کا بند اسکولوں کے حوالے سے اہم فیصلہ

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے صوبائی وزیر تعلیم سردار شاہ نے کہا کہ سندھ کے 11 ہزار اسکول بند تھے وہ یکم اگست سے کھل جائیں گے۔انہوں نے بتایا کہ یہ تمام اسکول اساتذہ کی کمی کی وجہ سے بند تھے اور یکم اگست تک اسکولوں میں فرنیچر بھی پہنچ جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ صوبے میں 40 ہزار پرائمری اسکول ہیں جس میں سے 5 ہزار غیر فعال اسکول ہیں، ایک ایک گاؤں میں 20 ، 20 اسکول ہمارے گلے میں پڑے ہیں جن کا بوجھ خزانے پر پڑرہا ہےصوبائی وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ ہمارا ٹارگٹ 5 ہزار اسکولوں اپ گریڈ کرنا ہے جبکہ ایک ہزار اسکول اس وقت آپ گریڈ کرسکتے ہیں کیونکہ اس سے زیادہ موجودہ بجٹ میں نہیں کرسکتے ہیں ۔ان کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس کوئی بھی سائنس میوزیم نہیں ہے صرف اسلام آباد میں سائنس میوزیم ہے جبکہ ہم ہر ڈویژنل ہیڈکوارٹر میں سائنس میوزیم بنانے کی اسکیم دے چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ سندھ ٹیچرز ڈیولپمنٹ اتھارٹی کا ایکٹ آج تک نہیں بنا اور ایکٹ جو منظور ہوا تھا وہ ایجوکیشن سسٹم کے لیے بڑا اہم ہے.ان کا کہنا تھا کہ استاد کے پاس کوئی بھی لائسنس نہیں ہوتا ہے جس کی وجہ سے جو بھی ٹیچر بننا چاہتا ہے بن جاتا ہے لیکن اگر کوالٹی کا استاد ہمارے پاس آگیا تو وہ سماج کو تبدیل کرسکتے ہیں۔