میزبانی نہ کرنے کے باوجود سری لنکا کو ایشیا کپ سے مالی فوائد ملیں گے

معاشی بدحالی سے دوچار سری لنکا نے ایشیا کپ کی میزبانی سے معذرت کر لی تھی لیکن انہیں اس ایونٹ سے خاطر خواہ مالی فوائد ملیں گے.تفصیلات کے مطابق میڈیا میں آنے والی چند رپورٹس کے مطابق، سری لنکا کرکٹ کو آئندہ 2022 ایشیا کپ سے 6 ملین ڈالر کی آمدنی ہوگی، اس حقیقت کے باوجود کہ یہ ٹورنامنٹ متحدہ عرب امارات میں منعقد ہو رہا ہے۔

واضح رہے کہ رواں ماہ سری لنکا اصل میں اس میگا ایونٹ کی میزبانی کرنے والا تھا لیکن ملک میں معاشی بدحالی کی وجہ سے وہ چھ ملکی ٹورنامنٹ کا انعقاد کرنے کی پوزیشن میں نہیں تھا۔سری لنکا کی جانب سے ایونٹ کی میزبانی سے دستبرداری کے بعد یہ ٹورنامنٹ متحدہ عرب امارات میں منعقد ہوگا، لیکن میزبانی کے حقوق سری لنکا کرکٹ بورڈ کے پاس ہیں اور اسی وجہ سے میزبانی کے حقوق، ٹکٹوں کی فروخت اور دیگر ذرائع سے حاصل ہونے والی آمدنی سری لنکا کرکٹ بورڈ کو دی جائے گی۔سری لنکا کرکٹ بورڈ کے سکریٹری موہن ڈی سلوا ان حالات سے مایوس تھے جس کی وجہ سے وہ اہم ٹورنامنٹ کی میزبانی سے محروم رہے۔