حکومت کی عوام پر ایک اور بوجھ ڈالنے کی تیاریاں

وفاقی حکومت نے مہنگائی کے ستائے عوام پر مزید بوجھ ڈالنے کی تیاریاں شروع کردی، حکومت پیٹرول و ڈیزل پر او ایم سی اور ڈسٹری بیوٹرز مارجن بڑھانے کی تجویز پرغورکر رہی ہے۔ذرائع کے مطابق پیٹرول اور ڈیزل پر تیل کمپنیوں کے لئے او ایم سی مارجن میں 63 فیصد اضافے کی تجویز تیار کی گئی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پیٹرول اور ڈیزل پر (او ایم سی) مارجن 2 روپے 32 پیسے فی لیٹر تک بڑھانے کی تجویز دی گئی ہے جبکہ پیٹرول اور ڈیزل پرآئل مارکیٹنگ کمپنیوں کا مارجن بڑھا کر 6 روپے فی لیٹر مقرر کرنے کی تجویز دے دی گئی ہے۔اس وقت پیٹرول اور ڈیزل پر ڈسٹری بیوٹر مارجن 3 روپے 68 پیسے فی لیٹر مقررہے، ای سی سی اور وفاقی کابینہ سے مارجن بڑھانے کی منظوری لی جائے گی۔اس سے قبل پیٹرول پر ڈیلر مارجن 2 روپے 10 پیسے فی لیٹر بڑھایا جا چکا ہے، ڈیزل پر ڈیلر مارجن 2 روپے 87 پیسے فی لیٹر بڑھانے کی منظوری دی جا چکی ہے۔
ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمت ہر ہفتے تبدیل ہوں گی
دوسری جانب ملک میں اب 15 دن کی بجائے ہر ہفتے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں تبدیل کی جائیں گی۔وزارتِ خزانہ کے ذرائع نے بتایا ہے کہ پاکستان کی جانب سے آئی ایم ایف کی عائد کی گئی ایک اور شرط پوری کیے جانے کا امکان ہے۔وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں رد و بدل کی مدت کا تعین ہو گا۔اس فیصلے سے عالمی مارکیٹ میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کا اثر عوام کو منتقل کیا جائے گا۔