لیہ میں لڑکیوں کو اغوا کرکے جانوروں کے ساتھ شرمناک حرکات پر مجبور کرنے والے گروہ کا انکشاف

لیہ میں لڑکیوں کو اغواءکرکے ان سے فحش فلموں کا دھندہ کرانے کا شرمناک انکشاف منظرعام پر آگیا۔ نجی ٹی وی چینل نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ ایک منظم گروپ لیہ کے علاقے میں سرگرم ہے جو لڑکیوں کو اغواءکرکے ان کے ساتھ جنسی زیادتی کی ویڈیوز بناتا اور انہیں فحش فلموں کی مختلف ویب سائٹس پر اپ لوڈ کرتا ہے۔ یہ گروپ لڑکیوں کو جانوروں کے ساتھ شرمناک حرکات کرنے پر بھی مجبور کرتا ہے اور اس قبیح فعل کی ویڈیوز بنا کر انٹرنیٹ پر اپ لوڈ کرتا ہے۔اس گروپ کا مکروہ دھندا اس وقت منظرعام پر آیا جب ایک 22سالہ لڑکی نے انصاف کے لیے عدالت سے رجوع کیا اور تحفظ کی اپیل کی۔ مقامی مجسٹریٹ نے فوری طور پر اس لڑکی کا میڈیکل ٹیسٹ کرانے اور مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔ جس کے بعد پولیس نے مقدمہ درج کرکے اس گروپ کے کارندوں کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارنے شروع کر دیئے۔اس متاثرہ لڑکی نے عدالت میں اور بعد ازاں لیہ پولیس کو بتایا کہ اس گینگ میں 20لڑکے لڑکیاں شامل ہیں۔ گروہ میں شامل لڑکیاں متاثرہ لڑکیوں کو ورغلا کر لاتی ہیں اور لڑکے انہیں جنسی زیادتی کا نشانہ بناتے اور ان کی ویڈیوز بنا لیتے ہیں اور پھر انہیں بلیک میل کرکے مکروہ دھندے پر لگا دیا جاتا ہے۔