معروف پاکستانی لیجنڈری کھلاڑی انتقال کرگئے

پاکستان کے لیجنڈ ہاکی کھلاڑی و اولمپیئن مطیع اللہ خان انتقال کرگئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق مطیع اللہ خان طویل علالت کے بعد 84 سال کی عمر میں اس دنیا فانی سے رخصت ہوئے، انہوں نے تین اولمپکس میں پاکستان کی نمائندگی کی، 31 جنوری 1938 کو پیدا ہونے والے مطیع اللہ خان لیفٹ آوٹ کی پوزیشن پر کھیلا کرتے تھے.

مطیع اللہ خان 1960 میں روم اولمپکس میں گولڈ میڈل جیتنے والی پاکستان ہاکی ٹیم کے رکن تھے جبکہ وہ ملبورن اولمپکس 1956 اور 1964 ٹویکیو اولمپکس میں کی سلور میڈلسٹ قومی ہاکی ٹیموں کا بھی حصہ رہے۔

وہ سابق قومی ہاکی ٹیم کے کپتان اولمپیئن سمیع اللہ خان اور اولمپئین کلیم اللہ خان کے چچا تھے، حکومتِ پاکستان نے ہاکی میں گراں قدر خدمات کے اعتراف میں مطیع اللہ خان کو تمغہ امتیاز سے نوازا تھا۔مطیع اللہ خان گزشتہ چند دنوں سے بہاولپور کے مقامی اسپتال کے انتہائی نگہداشت کے شعبہ میں داخل تھے، مرحوم کو نمازِ جنازہ کے بعد بہاولپور میں سپردِ خاک بھی کردیا گیا ہے۔