پینشن بند؛ 102سالہ بزرگ اپنے زندہ ہونے کا ثبوت دینے کیلئے دلہا بن کر حکومتی دفتر کے باہر پہنچ گیا

پینشن بند ہونے کے باعث 102 سالہ بزرگ زندہ ہونے کا ثبوت دینے کیلئے دلہا بن گیا۔حال ہی میں بھارت میں ایک واقعہ پیش آیا جہاں حکام نے ایک بزرگ شخص کی پینشن بند کر دی کیونکہ انکا خیال تھا کہ اب وہ بزرگ انتقال کر چکے ہوں گے۔لیکن حقیقت یہ نہیں تھی کیونکہ وہ شخص زندہ تھا، دولی چند نامی بھارتی بزرگ شہری نے حکام کو اپنے زندہ ہونے کا کہا لیکن حکام ماننے کو تیار نہیں تھے۔بزرگ نے حکام کو یقین دلانے کیلئے ایک انوکھا طریقہ اپنایا اور وہ یہ کہ انہوں نے عروسی جوڑا پہنا اور بگھی میں بیٹھ کر حکومتی دفتر کے باہر پہنچ گئے۔بگھی کے آگے ایک بورڈ لگا ہوا تھا جس پر ہریانوی زبان میں سرخ رنگ سے لکھا تھا کہ تھارا پھوپھا ابھی زندہ ہے اور اسی کے نیچے بزرگ شہری کی عمر بھی لکھی ہوئی تھی۔اس انوکھے احتجاجی مظاہرے میں سماجی کارکن نوین جے ہند کے علاوہ کافی لوگ بھی دولی چند نامی بھارتی بزرگ شہری کے ہمراہ تھے۔