دہائیوں بعد نہانے والا شخص چل بسا

ایران سے تعلق رکھنے والے دنیا کے میلے ترین شخص عمو حاجی دہائیوں بعد نہانے سے انتقال کر گئے ہیں۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق ایران سے تعلق رکھنے والے 94 برس کے دنیا کے میلے ترین شخص عمو حاجی دہائیوں بعد نہانے سے انتقال کرگئے ہیں۔رپورٹس کے مطابق عمو حاجی نے 50 سال سے زائد عرصے تک پانی اور صابن کا استعمال نہیں کیا تھا جب کہ وہ اس لیے بھی نہانے سے ڈرتے تھے کہ کہیں وہ بیمار نہ ہوجائیں۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عمو حاجی بیماری کے ڈر سے اتنے عرصہ تک نہیں نہائے تھے جب کہ ان کی گندگی کا اندازہ اس بات سے بھی لگایا جاسکتا ہے کہ وہ پھپوندی والا کھانا اور زنگ آلود برتن میں پانی پیا کرتے تھے۔رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ مقامی افراد کی جانب سے انہیں متعدد بار نہلانے کی کوشش کی گئی تھی لیکن ہمیشہ انہیں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا تاہم چند ماہ قبل انہیں کامیابی نصیب ہوئی اور وہ انہیں نہلانے میں کامیاب ہوئے۔رپورٹ کے مطابق دنیا کے گندے ترین شخص نہانے کے بعد بیمار رہنے لگ گئے تھے اور اسی حالت میں وہ گذشتہ اتوار کو دنیا سے چل بسے۔