سیلاب متاثرہ علاقوں کے طلباء کی دو سیمسٹر کی فیس نہ لینے کا اعلان

اعلیٰ تعلیمی کمیشن (ایچ ای سی) کی جانب سے سیلاب متاثرہ علاقوں کے طلباء کی دو سیمسٹر کی فیس نہ لینے کا اعلان کیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق ایچ ای سی نے سیلاب متاثرہ علاقوں کے لیے یہ اہم فیصلہ جامعات کی انتظامیہ سے باہمی مشاورت کے ساتھ کیا ہے۔اس حوالے سے اعلیٰ تعلیمی کمیشن کے چیئرمین ڈاکٹر مختار احمد کا کہنا ہے کہ ایچ ای سی کا بجٹ مسلسل کم اور جامعات کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ مالی بحران کی وجہ سے جامعات مسائل سے دوچار ہیں، جامعات کو فنڈز اب ان کی کارکردگی سے مشروط کرنے جارہے ہیں۔ڈاکٹر مختار نے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومتوں سے درخواست کریں گے کہ مالی مسائل ختم ہونے تک نئی جامعات نا بنائی جائیں۔ایچ ای سی کے چیئرمین کا کہنا ہے کہ ڈگریوں کی تصدیق کا عمل جلد مکمل آن لائن کردیا جائے گا، مائیکروسوفٹ سمیت عالمی اداروں سے طلباء کے آن لائن کورسز کا آغاز کرنے جارہے ہیں اور وزیر اعظم لیپ ٹاپ اسکیم آئندہ چند روز میں بحال ہونے جارہی ہے۔چیئرمین ڈاکٹر مختار نے مزید کہا کہ سیلاب زدہ علاقوں کے طلباء کو دو سیمسٹرز کی فیس ادائیگی کے لیے وقت دیا جائے گا۔یاد رہے کہ وفاقی حکومت نے وزیر اعظم لیپ ٹاپ اسکیم دوبارہ شروع کرنے کا اعلان کردیا تھا، وزیر اعظم لیب ٹاپ اسکیم کے تحت ایک لاکھ طلباء کو لیب ٹاپ فراہم کیے جائیں گے۔اسکیم کے تحت پوسٹ گریجوایٹس اور پی ایچ ڈی اسٹوڈنٹس کو لیپ ٹاپ مفت فراہم کیے جائیں گے، پی ایچ ڈی اسٹوڈنٹس کو عالمی معیار کے لیپ ٹاپ وفاقی حکومت سے ملے گا، انڈر گریجوایٹس کے فرسٹ ائر سے فورتھ ائر کے طلباء میں میرٹ پر لیپ ٹاپ دیں گے۔واضح رہے کہ وزیر اعظم لیپ ٹاپ اسکیم نوازشریف کے دور میں 2013 میں شروع کی گئی تھی، شہباز شریف نے بطور وزیر اعلیٰ پنجاب اسی اسکیم کے تحت ہزاروں طلباء میں لیپ ٹاپ مفت فراہم کیے تھے۔