دنیا کا خوفناک کنواں؛ جس میں جانے والے انسان 20 سال بعد ملے

دنیا بھر میں ایسے بہت سے مقامات ہیں جو انتہائی خوفناک ہیں، انہی میں سے ایک کا ذکر آج ہم آپ سے کریں گے۔امریکہ میں ایک ایسا ہی خوفناک کنواں ہے جس میں سے لوگ پانی نہیں بھرتے بلکہ اس میں موجود دنیا کے خوفناک راز کو دیکھنے کی خواہش کرتے ہیں، جس پر ایک سیاہ پردہ ڈلا ہے۔ٹیکساس میں موجود یہ کنواں ناختم ہونے والا کنواں کہلاتا ہے، اس کی وجہ یہ ہے کہ اس کنویں کی گہرائی اور اس میں موجود خطرات کا علم کسی کو نہیں ہے۔کہا جاتا ہے کہ اس کی گہرائی 4000 فٹ سے زائد ہے اور اس میں جانے والے ہر قسم کی تیاری کے بعد ہی اندر جا سکتے ہیں۔ بہت سے اسکیو ڈائیورز اس کنویں میں گئے لیکن ان میں سے کچھ گہرے خوفناک کنویں کی گہرائی میں پھنس گئے جہاں موجود دباؤ انہیں سانس لینے میں مشکل پیدا کر رہا تھا اور پھر ان کی لاش ہی واپس آئی۔ جتنے بھی لوگ اس کنویں میں گئے ان میں سے 12 کی روحیں بھٹک رہی ہیں لیکن کچھ ایسے بھی ہیں جو زندہ سلامت واپس آئے ہیں۔حال ہی میں سائنسدانوں نے اس کنویں پر تحقیق کی جس میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ یہ کوئی کنواں نہیں ہے بلکہ ایک سرنگ ہے، جو کئی سرنگوں سے جا ملتی ہے۔ ساتھ ہی اب یہاں گہرائی اور سیاہی کی وجہ سے سمندری حیاتیات کا قبضہ ہے۔تحقیق کے دوران اس کنویں میں کسی انسان کے زندہ رہنے کا ثبوت تو نہیں ملا مگر ایک انسان کی باقیات ضرور پائی گئی ہیں۔یہ باقیات اس شخص کی ہیں جو اس کنویں میں گیا تھا، لوگوں کا کہنا تھا کہ وہ واپس آجائے گا لیکن 20 سال بعد اس کی باقیات ہی ملیں۔