روزانہ مونگ پھلی کھانا صحت کے لیے مفید ہوتا ہے؟

مونگ پھلی موسم سرما کی سوغات ہے جسے بڑے ہوں یا بچے سبھی بہت شوق سے کھاتے ہیں۔لیکن آپ میں سے بہت سے لوگ اس کے فوائد سے واقف نہیں ہوں گے تو آج ہم آپ کو بتائیں گے کہ روزانہ مونگ پھلی کھانا صحت کے لیے کتنا مفید ہوتا ہے۔ بہت سے لوگوں کا ماننا ہے کہ مونگ پھلی بادام، اخروٹ یا کاجو جتنی مفید نہیں ہوتی لیکن حقیقت اس کے بالکل برعکس ہے کیونکہ مونگ پھلی صحت کے لیے بہت مفید ثابت ہوسکتی ہے۔ مونگ پھلی پروٹین، چکنائی اور فائبر سے بھرپور ہوتی ہے، اور یہ میگنیشم، فولیٹ، وٹامن ای، کاپر، کیلشیئم، آئرن، زنک، فاسفورس، وٹامن بی 3، وٹامن بی 1، وٹامن بی 6 اور وٹامن بی 2 کے حصول کا ذریعہ ہوتی ہے۔ ایک تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ مونگ پھلی دل کی صحت کے لیے انتہائی مفید ثابت ہوتی ہے کیونکہ اس کو کھانے سے کولیسٹرول لیول میں کمی آتی ہے جس سے امراض قلب کا خطرہ کم ہوتا ہے۔ مونگ پھلی پروٹین سے بھرپور ہوتی ہے یہی وجہ ہے کہ اس کو کھانے سے انسان کا پیٹ زیادہ دیر تک بھرا رہتا ہے اور بھوک نہیں لگتی جس کے باعث وزن میں کمی ہوتی ہے۔شوگر کے مریض بھی مونگ پھلی اعتدال میں رہ کر کھا سکتے ہیں کیونکہ اس کو کھانے سے بلڈ شوگر کی سطح میں اضافہ نہیں ہوتا۔مونگ پھلی کھانے سے نظام ہاضمہ بہتر ہوتا ہے اور جسمانی ورم میں کمی آتی ہے کیونکہ اس میں فائبر ہوتا ہے۔ایک تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ مونگ پھلی کے مکھن کو کھانے سے معدے کے کینسر کا خطرہ کم ہوسکتا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت