نیوزی لینڈ کی وزیر خارجہ اور شاہ محمود قریشی کا بذریعہ ویڈیو لنک رابطہ

نیوزی لینڈ کی وزیر خارجہ اور شاہ محمود قریشی کا بذریعہ ویڈیو لنک رابطہ  ہوا ہے جس میں شاہ محمود قریشی نے نیوزی لینڈ کی وزیر خارجہ کے ساتھ کرکٹ ٹیم کی واپسی اور  دورہ پاکستان منسوخ  کرنے کا معاملہ اٹھایا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ کے یکطرفہ فیصلے سے دونوں ممالک میں کرکٹ شائقین کی دل آزاری ہوئی ہے۔

نیوزی لینڈ کی وزیر خارجہ سے پاکستان کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے  کا عزم کا اعادہ کیا گیا ہے۔

دونوں وزرائے خارجہ نےافغانستان کی صورتحال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا اور بات چیت میں افغانستان میں سلامتی، استحکام اور اجتماعیت کے حامل سیاسی تصفیے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ افغانستان میں انسانی بحران سے نمٹنے کیلئے ٹھوس اقدامات کرنے ہوں گے اور افغانوں کو تنہائی کا شکار نہ ہونے دیا جائے۔
شاہ محمود قریشی نے نیوزی لینڈ وزیر خارجہ کو کابل انخلامیں معاونت سے آگاہ کیا ہے جبکہ نیوزی لینڈ کی وزیر خارجہ نے نیوزی لینڈ سمیت مختلف ممالک کے شہریوں کو کابل سے محفوظ انخلاء میں بھرپور مدد فراہم کرنے پر وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور پاکستان کی قیادت کا شکریہ ادا کیا ہے۔

وزیر خارجہ  نے نیوزی لینڈ کی وزیر خارجہ خارجہ کو مقبوضہ جموں و کشمیر میں،بھارتی قابض افواج کی جانب سے جاری انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے آگاہ کیا ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ہم نے حال ہی میں مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی قابض افواج کے سنگین جنگی جرائم کے ٹھوس شواہد پر مبنی “ڈوزئر” عالمی برادری کے سامنے رکھا ہے

شاہ محمود قریشی کا فیٹف کے حوالے سے پاکستان کی جانب سے اٹھائے گئے موثر اقدامات سے نیوزی لینڈ کی وزیر خارجہ کو آگاہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ توقع ظاہرکرتے ہیں کہ نیوزی لینڈ تکنیکی بنیادوں پر پاکستان کی حمایت جاری رکھے گا۔

starasianews

Read Previous

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ سے ایرانی چیف آف جنرل اسٹاف کی ملاقات، آئی ایس پی آر

Read Next

عمران خان کو سیاسی شہید نہیں بننے دیں گے، مریم نواز