پاک ایران بارڈر مارکیٹوں کے قیام سے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے، وزیر اعظم

وزیراعظم عمران خان نے پاک ایران سرحد کو امن و دوستی کی سرحد قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بارڈر مارکیٹوں کے قیام سے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔

زرائع کے مطابقوزیر اعظم  نے یہ بات ایرانی چیف آف جنرل اسٹاف میجر جنرل محمد باقری سے ملاقات کے موقع پر کہی ہے۔ ملاقات میں دو طرفہ تعلقات اور خطے کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے گفتگو کے دوران معیشت اور توانائی سمیت مختلف شعبوں میں تجارت بڑھانے پر زور دیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دو اضافی سرحدی کراسنگ پوائنٹس کھلنے سے نقل وحرکت میں مزید آسانی پیدا ہو جائے گی۔ عمران خان  نے مقبوضہ جموں و کشمیر کے تنازع پر ایران کے مثبت کردار کو سراہا ہے۔

زرائع  کے مطابق وزیراعظم عمران خان اور ایرانی چیف آف جنرل اسٹاف میجر جنرل محمد باقری کی ہونے والی ملاقات میں افغانستان کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کا اس موقع پر کہنا تھا کہ پاکستان پرامن و مستحکم افغانستان اور پائیدار معیشت  کا خواہشمند ہے۔ ان کا زور دے کر کہنا تھا کہ افغانستان میں بین الاقوامی برادری مثبت طور پر اپنا کردار ادا کرے۔ افغانستان میں معاشی تباہی کو روکنے کے لیے اقدامات کرنا چاہئیں۔

ان کا  مزیدکہنا تھا کہ افغانستان کے پڑوسیوں کی حیثیت سے پاکستان اور ایران کا امن و استحکام سے براہ راست تعلق ہے۔

زرائع  کے مطابق وزیراعظم عمران خان  نے قومی مفاہمت اور جامع سیاسی تصفیے کی اہمیت پر زور دیا  ہےاور پاکستان و ایران کے درمیان قریبی ہم آہنگی کی اہمیت کو بھی اجاگر کیا ہے۔

starasianews

Read Previous

گزشتہ 24 گھنٹوں میں12888نمونوں کی جانچ کی گئی؛ وزیراعلیٰ سندھ

Read Next

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارسے اراکین پنجاب اسمبلی سمیرااحمد اورسعدیہ سہیل نے ملاقات کی